Date   >> Sunday ,16 December 2018

تازہ ترین خبریں

تصویر کی زبانی

انٹرٹینمینٹ

قومی

کمیونسٹ لیڈر گووند پانسرے کی موت

ممبئی (ایجنسیاں):سینئر کمیونسٹ لیڈر گووند پانسرے کی جمعہ کی رات ممبئی کے بریچ کینڈی ہسپتال میں موت ہو گئی۔ انہیں جمعہ کی شام ہی کولہاپور سے ایئر اےمبولینس سے علاج کے لئے یہاں لایا گیا تھا۔ 82 سال کے پانسرے کو پیر کے دن اس وقت گولی مار دی گئی تھی جب وہ صبح کی سیر کے بعد گھر لوٹ رہے تھے۔ ٹول کے خلاف تحریک کی قیادت کر رہے پانسرے کے ساتھ ان کی بیوی بھی 16 فروری کو ہوئے اس حملے میں زخمی ہو گئی تھیں۔ دونوں کو گولی موٹر سائیکل سوار نامعلوم حملہ آوروں نے ماری تھی۔کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا (سی پی آئی) کے لیڈر کو ان کی گردن اور گھٹنے کے قریب دائیں پیر میں تین گولیاں لگی تھیں۔ پانسرے ریاست میں روڈ ٹول ٹیکس کے خلاف مہم کی قیادت کر رہے تھے۔ ان کی بیوی اوما پانسرے کو بھی ایک گولی لگی تھی۔گولی لگنے کے فورا بعد کولہاپور کے ایک اسپتال میں سرجری کے بعد پانسرے کو جمعہ کی شام ایئر اےمبولینس سے ممبئی لایا گیا۔ اس ایئر اےمبولینس کا انتظام مہاراشٹر حکومت نے کیا تھا۔ ایک اہلکار نے بتایا کہ شدید زخمی پانسرے کو ایئر اےمبولینس شام 4 بجے ممبئی کے لئے لے کر روانہ ہوئی تھی۔میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر گیتا گوپیکر نے بتایا کہ پانسرے کی حالت بگڑنی شروع ہو گئی تھی، جس کے بعد رات 9 بجے انہوں نے دم توڑ دیا۔ پانسرے کی موت کی خبر ملتے ہی مہاراشٹر کے وزیر اعلی دیویندر فڑنویس بریچ کینڈی ہسپتال پہنچ گئے۔ پانسرے کی بیوی اوما کی حالت اب ٹھیک ہے اور وہ بات کر پا رہی ہیں۔ انہی کی نشاندہی پر پولیس نے مشتبہ افراد کا خاکہ بھی تیار کر لیا ہے۔ بتایا گیا کہ مہاراشٹر اے ٹی ایس کی ٹیم اور ممبئی پولیس اس حملے کو لے کر کولہاپور پولیس کے ساتھ رابطے میں ہے اور تحقیقات تیزی سے آگے بڑھائی جا رہی ہے۔وہیں، کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا نے اپنے سینئر رہنما کی موت پر سخت رد عمل کااظہارکیا ہے۔ پارٹی لیڈر اے ابھینکر نے کہا کہ حکومت کو پانسرے کے قاتلوں کو پکڑنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑنی چاہئے۔سماجی کارکن بابا ادھو نے کہا کہ اندھ وشواس مخالف کارکن نریندر دابھولکر کی ڈیڑھ سال پہلے قتل کے بعد پانسرے کا قتل ہوا ہے۔